وانا میں ملک بھر کی طرح قبائلی عمائدین نے 14 اگست کے دن پودا لگاکر شجرکاری مہم کا اغاز کیا

وانا۔۔۔ ضلع جنوبی وزیرستان کے ہیڈکوارٹر وانا میں محکمہ جنگلات کے آفس میں ایک پروقار تقریب منعقد کی گئی جس میں اسسٹنٹ کمشنر وانا امیر نواز، رینج فارسٹ آفیسر یعقوب خان، وانا جنگلات انچارج نور سلام وزیر سمیت قبائلی عمائدین نے شرکت کی۔

اس موقع پر اسسٹنٹ کمشنر وانا امیرنواز، آر ایف او یعقوب خان، ملک شہریار وزیر ، ملک سیدرانور وزیر و دیگر قومی مشران نے پودا لگا کر شجرکاری مہم کا آغازکردیا۔ اس موقع پر اسسٹنٹ کمشنر وانا امیر نواز میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے پاکستان کو بہت بڑی قربانیوں کے بعد حاصل کرلیا ہے اور ہمیں چاہئے کہ اس مٹی سے اپنی وفاداری اور محبت کو برقرار رکھتے ہوئے دن رات ایک کرکے اپنی خدمت کو اسی طرح جاری وساری رکھیں۔

اسسٹنٹ کمشنر وانا امیرنواز نے شجرکاری مہم کے حوالے سے بتایا کہ پودے لگانے کا مقصد علاقے کو سرسبز وشاداب بنانا ہے اور درخت علاقے کی خوبصورتی کا زینت ہے۔ انہوں نے کہا کہ ماہرین کے مطابق پودے چاہے درختوں کی شکل میں ہوں یا چھوٹے گملوں میں، یہ دماغی صحت پر اچھے اثرات ڈالتے ہیں۔ پودے آپ کا موڈ بہتر کرتے ہیں، آپ کے ذہنی دباؤ کو کم کرتے ہیں اور آپ کی تخلیقی صلاحیتوں میں اضافہ کرتے ہیں۔ پودے آپ کے موڈ کو تبدیل کردیتی ہے۔ اسی طرح اگر آپ کوئی تخلیقی کام کرنا چاہتے ہیں تو پودوں کے قریب بیٹھ کر کریں اس سے یقیناً آپ کی تخلیقی کارکردگی بہتر ہوگی۔ انہوں نے مزید کہا کہ جنگلات کی کٹائی روکنے کیلئے حکومت ہنگامی بنیادوں پر اقدامات اٹھارہی ہیں کسی کو قیمتی درخت کے کاٹنے کی ہرگز اجازت نہیں دینگے۔

اس موقعہ پر ملک سیدرانور وزیر نے کہا کہ جو مسلمان پودا لگاتا ہے اور اس سے انسان ، چوپائے یا پرندے کھالیں تو یہ اس کے لیے قیامت تک کے لیے صدقہ ہے ۔ قبائلی عمائدین نے کہا کہ ہمیں اپنے پیارے ملک پاکستان پر فخر ہیں اور ہرقسم کی قربانی دینے کیلئے تن من حاضر ہیں ملک کی دفاع کیلئے قومی اداروں کے ساتھ شانہ بشانے کھڑے ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.